سی پی این ای اراکین کے اخبارات کو اشتہارات کے واجبات کی فوری ادائیگی کی جائے، سندھ ہائی کورٹ

0
112

تاریخ: 10 ستمبر 2020ء

کراچی ( ) سندھ ہائی کورٹ نے حکومت سندھ کے چیف سیکریٹری کو حکم دیا ہے کہ وہ سی پی این ای کے اراکین کے اخبارات کو اشتہارات کے واجبات کی ادائیگی کے لئے فنانس سیکریٹری اور دیگر متعلقہ محکموں کو ضروری ہدایات دیں کہ وہ انفارمیشن ڈپارٹمنٹ کو اشتہارات کے واجبات کی ادائیگیوں کے لئے فنڈز ریلیز کریں۔ یہ حکم جسٹس محمد علی مظہر اور جسٹس یوسف علی سید پر مشتمل سندھ ہائی کورٹ کی ڈویژن بینچ نے سی پی این ای کی جانب سے اخباری اداروں کو 2019-20ء کے عرصے کے اشتہاراتی واجبات کی ادائیگیوں کے سلسلے میں دائر کردہ آئینی درخواست پر سماعت کرتے ہوئے دیا۔ اس موقع پر سندھ انفارمیشن ڈپارٹمنٹ کی جانب سے ڈائریکٹر انفارمیشن (ایڈورٹائزمنٹ) ذوالفقار علی شاہ نے عدالت کو بتایا کہ انفارمیشن ڈپارٹمنٹ کی جانب سے فنانس ڈپارٹمنٹ کو اخبارات کے واجبات کی ادائیگیوںکے لئے خط لکھ دیا گیا ہے جیسے ہی فنڈز ریلیز ہوں گے سی پی این ای کے اراکین کے اخبارات کو فوری طور پر ادائیگیاں کر دی جائیں گی، جس پر سی پی این ای کے سیکریٹری جنرل ڈاکٹر جبار خٹک نے عدالت کو بتایا کہ یہ صرف ٹال مٹول کے حربوں پر مشتمل روایتی طریقہ کار ہیں جبکہ حقیقت یہ ہے کہ اخبارات کو طویل عرصے سے ادائیگیاں نہیں کی جا رہی ہیں جس کے باعث اخباری ادارے شدید معاشی بحران کا شکار ہیں اور اخباری اداروں کے صحافی اور دیگر کارکن بھی تنخواہوں کی جزوی ادائیگیوں سے شدید مالی پریشانیوں کا شکار ہیں۔ عدالت نے سندھ حکومت کے چیف سیکریٹری کو سی پی این ای کے اراکین کے اخبارات کے واجبات کی ادائیگیوں کے معاملات سے متعلق امور فنانس ڈپارٹمنٹ و دیگر محکموں سے فوری طور پر حل کروانے کا حکم دیتے ہوئے آئندہ سماعت02اکتوبر 2020ء تک ملتوی کر دی۔ سی پی این ای کی پیروی سید محمد جمیل رضا زیدی اور محمد اظہر فریدی ایڈووکیٹس نے کی۔ اخبارات کو 2018ء تک کے واجبات کی ادائیگیوں کے عدالتی حکم پر عملدرآمد نہ کرنے پر انفارمیشن ڈپارٹمنٹ کے خلاف سندھ ہائی کورٹ میں دائر کردہ سی پی این ای کی جانب سے توہین عدالت کے مقدمہ کی سماعت 24 ستمبر2020ء کواسی ڈویژن بنچ میں ہوگی۔

جاری کردہ: کونسل آف پاکستان نیوزپیپر ایڈیٹرز۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here